Proud to breathe in the Yousufi-era of Urdu Ad’b

Mushtaq Ahmad Yousufi, widely known as humor writer has too many compliments by multiple icons of Urdu Ad’b. Dr. Zaheer Fatehpuri said, “We are living in ‘Yousufi era’ of Urdu Literature..”

This kind of compliment does not come up for some ordinary person or for every second, third one but such people born in centuries who have such intellect that they become the identity of something. In Yousufi case, he became the identity of humor. As Ibn’e Insha once said,  “…if ever we could give a name to the literary humor of our time, then the only name that comes to mind is that of Yusufi!” Definitely Insha jee!

In the start of his book “Charagh Talay”, he had given us his introduction in such sarcastic way that you would love that.

نام: سرورق پر ملاحظہ فرمائیے۔
خاندان: سو پُشت سے آبا، سپہ گری کے علاوہ سب کچھ رہا ہے۔

تاریخ پیدائش: عمر کی اُس منزل پر آ پہنچا ہوں کہ اگر کوئی سنِ ولادت پوچھ بیٹھے تو اُسے فون نمبر بتا کر باتوں میں لگا لیتا ہوں۔

Wah Yousafi Jee! Kya bat ha apki..!

I would love to quote some pickup lines from his great collection..

ـ اگر آپ کا ذہن بند ہے تو برائے مہربانی اپنا منہ بھی بند رکھیں۔

ـ بڑھیا سگریٹ پیتے ہی ہر شخص کو معاف کر دینے کو جی چاہتا ہے

خواہ رشتے دار جی کیوں نہ ہو۔

ـ میرا خیال ہے کہ حالاتِ حاضرہ پہ تبصرہ کرتے وقت جو شخص اپنے بلڈ پریشر اور گالی پر قابو رکھ سکے، وہ یا تو ولی اللّٰہ ہے۔ یاپھر وہ خود ہی حالاتِ حاضرہ کا ذمہ دار ہے۔

ـ اپنی شادی تو اس طرح ہوئی جیسے لوگوں کیموت واقع ہوتی ہے۔ اچانک، بغیر مرضی کے۔

ـ دشمنوں کے حسبِ عداوت تین درجے ہیں۔ دشمن، جانی دشمن اور رشتے دار۔

ـ جو اپنےماضی کو یاد نہیں کرنا چاہتا وہ یقیناً لوفر رہا ہوگا۔

ـ وہ زہر دے کر مارتی تو دنیا کی نظروں میں آجاتی، اندازِ قتل تو دیکھو، ہم سے شادی کرلی۔

ـ کچھ لوگ اتنے محنتی ہوتے ہیں کہ جُوتا پسند کرنے کے لئے بھی مسجد کا رُخ کرتے ہیں۔

3,441 total views, 1 views today

Related posts

One Thought to “Proud to breathe in the Yousufi-era of Urdu Ad’b”

  1. With thanks! Valuable information!

Leave a Comment